(45) بارشیں محبت کی/ شاعری ۔ مدت ہوئی عورت ہوئے

   [45] بارشیں محبّت کی
BARISHEIN


کاش میرے آنگن میں
kaash mere aangan mein
بارشیں محبّت کی
barishein mohabbat ki
اِس برس برس جائیں
is bras bras jaein
سارے غم کے طوفاں اب
sare gham k tofan ab
گھر کا رستہ تکنے کو
ghar ka rasta takne ko
اے خدا ترس جائیں
ay khuda tras jaein
کیا ہے ہاتھ زخمی ہوں
kia hain hath zakhmi hon
جو دل کے راستے سارے
jo dl k raste sare
خوشبوؤں میں بس جائیں
khushboun mein bas jaein
ایک جسم و جاں بن کر
eik jism o jan ban kr
لے کے سانس دکھ سُکھ کی
le k sans dukh sukh ki
ایک ایک نس جائیں
eik eik ns jaein
سب سیاہ راتوں کو
sab syah ratoon ko
ممّتاز کڑوی باتوں کو
Mumtaz karwi batoon ko
کر ختم عبس جائیں
kr khatam abas jaein
●●●
کلام:ممتازملک
مجموعہ کلام:
مدت ہوئی عورت ہوئے
اشاعت:ء2011 
●●●
100% LikesVS
0% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں