(47) ڈور/ شاعری ۔ مدت ہوئی عورت ہوئے

[47]  ڈور  


رشتے نبھا رہی ہوں
rishte nibha rahi hoon
ریشم کی ڈور بُن کر
resham ki door bun kr

ہاتھوں میں زخم پاۓ
hathoon mein zakhm epay
کانٹوں سے پھول چُن کر
kantoon se phool chun kr

کوئ کہاں جیا ہے
koi khan jia hai
دنیا کی بات سُن کر
dunya ki bat sun kr

اپنا جہاں بسا لے
apna jahan basa le
اپنے ہی سر کو دُھن کر
apne hi sr ko dhun kr

ممّتاز مانگ رب سے
Mumtaz mang rab se
اس کے ہی گایا گُن کر
os k hi gaya gun kr
●●●
کلام: ممتازملک.پیرس 
مجموعہ کلام:
مدت ہوئی عورت ہوئے 
اشاعت: 2011ء
●●●
100% LikesVS
0% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں