(32) شمس/ شاعری ۔ میرے دل کا قلندر بولے

(32) شمس 

جس طرح شمس سے رشتہ ہے اسکی حدت کا
 آج کے دور میں سنتے ہیں شور جدت کا 

آجکل پیار کے احساس کا دعوی ہے بڑا  
  اب کہاں پہلے کا انداز رنگ شدت کا

   آنکھ سے دور چلا جائے چار  دن بھی اگر
   بھولنے کے لیئے محتاج نہیں مدت کا

   چند لمحوں کی رفاقت پہ نہ اترایا کرو
   اب تو برسوں کی ریاضت میں رنگ بدعت کا
   
کیا خزاؤں میں درختوں کی ویرانی دیکھی  
 جیسے بھرپور جوانی میں دور عدت کا 

   ہار کا درد کا ممتاز مارتا ہے خیال
  بارھا دیتا ہے آرام درد شدت کا 
●●●
کلام: ممتازملک 
مجموعہ کلام: 
میرے دل کا قلندر بولے 
اشاعت: 2014ء
●●●
100% LikesVS
0% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں