نفاذ اردو فاطمہ قمر/ رپورٹ

      27 فروری2021ء بروز ہفتہ تحریک نفاذ اردو کی جاندار آواز و کردار محترمہ فاطمہ قمر صاحبہ نے پیرس سے آئی ہوئی معروف لکھاری اور شاعرہ محترمہ ممتازملک اور دوبئی سے تشریف لائی ہوئی دوست محترمہ یاسمین ظفر صاحبہ کے لیئے اپنی رہائشگاہ پر ایک خصوصی نشست کا اہتمام کیا ۔ جس میں نفاذ اردو کے سلسلے میں خواتین کے کردار پر روشنی ڈالی گئی ۔ بحث میں حصہ لینے والوں میں محترمہ فاطمہ قمر ، معروف پنجابی ادیبہ اور شاعرہ شگفتہ غزل ، معروف لکھاری و کالمنگار ناہید نیازی ،  تنظیم چادر انٹرنیشنل کی صدر معروف شاعرہ و کالمنگار ذرقا نسیم ، جگنو انٹرنیشنل کی صدر معروف شاعرہ و لکھاری ایم ذیڈ کنول نے ممتازملک اور یاسمین ظفر نے بھرپور حصہ لیا ۔ جس میں خواتین میں بڑھتے ہوئے منفی رجحانات کی نشاندہہ کی گئی اور اس کی رقک تھام کے لیئے مختلف آراء پیش۔کی گئیں ۔۔پروگرام کے آخر میں فاطمہ قمر صاحبہ اور انکی ہونہار صاحبزادی ڈاکٹر سلمی نے پرتکلف عصرانے کا اہتمام کر رکھا تھا ۔ جس کے سلیقے کی سبھی نے تعریف کی ۔ آخر میں نفاذ اردو کے مشن کے لیئے دعا زرقا نسیم صاحبہ نے کی ۔ یوں بہت سی نیک خواہشات اور تمناوں کیساتھ اس یادگار محفل کا اختتام ہوا ۔ پیش ہیں اس پروگرام کی  چند تصویری جھلکیاں

رپورٹ:(ممتازملک۔لاہور) 

                        ●●●

100% LikesVS
0% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں