(7) اےوطن تیرےبیٹے / قومی گیت. مدت ہوئی عورت ہوئے

[7] اے وطن تیرے بیٹے
aye watan tere bete


اے وطن ہم تیری عظمت پہ نچھاور ھونے
جب بھی آواز کبھی دے گا چلے آئیں گے
ay watan hum teri azmat pe nichawar hone
jb bhi aawaz kabhi dega chale ayen gy

تیرے رخساروں کی لالی تجھے لوٹانے کو
جان کیا چِیز ہےہم خون بھی ٹپکائیں گے 
tere rukhsaron ki lali tujhe lotane ko
jan kia cheez hai hum khoon bhi tapkayen gy 

تیرے اندھیاروں میں کرنے کو چراغاں اے وطن
چاندسورج بھی تیری گود میں پہنچائیں گے 
tere andhyaron me
in krne ko charaghan ay watan 
chand soraj bhi teri gude mein pohnchain gy

جو بھی اُٹھے گی کبھی میلی نظر تیری طرف
نوچ کر اُسکو سمندر میں بہا آئیں گے 
jo bhi otthe gi kabhi maili nzar teri taraf
noch kr os ko samander mein baha aayen gy 

تیرا پرچم کبھی جھُکنے نہیں دیں گے اے وطن
تیرے بیٹے تیری خاطر کچھ بھی کر جائیں گے 
tera prcham kabhi jhukne nahin dein ge ay watan 
tere bete teri khatir kuche bhi kar jayen gy 

اپنے دامن میں زمانے کی بہاریں بھر کر
تُو بُلاۓ تیری آغوش میں آجائیں گے 
apne damen mein zamane ki baharein bher kr
tu bulay teri aghoch mein aa jayen gy 

تُو میری ماں ہےتیری گود میں آنکھیں موندے
موت آۓ گی تو ہم چین سے مر جائیں گے 
tu meri maan hai teri gude mein ankhein monde
mote aye gi to hum chain se mer jain ge 

تیرے جگنو ہیں تجھے روشنی پہنچائیں گے
تُو پُکارے گا تو ہم دوڑے چلے آئیں گے 
tere jugno hain tujhe roshni pohnchain gy
tu pukare ga to hum dore chale ayen gy
●●●

کلام: ممتازملک
مجموعہ کلام:
 مدت ہوئی عورت ہوئے
اشاعت: 2011ء
●●●
100% LikesVS
0% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں